Saturday, 29 December 2012

Pin It

Widgets

کبھی یوں بھی آ مری آنکھ میں کہ مری نظر کوخبر نہ ہو

Best Romantic Poetry

 
کبھی یوں بھی آ مری آنکھ میں کہ مری نظر کوخبر نہ ہو
مجھے ایک رات نواز دے مگر اس کے بعد سحر نہ ہو

وہ بڑا رحیم و کریم ہے مجھے یہ صفَت بھی عطا کرے
  تجھے بھولنے کی دعا کروں تو مری دعا میں اثر نہ ہو

مرے بازوؤں میں تھکی تھکی ابھی محو خواب ہے چاندنی
نہ اٹھے ستاروں کی پالکی ابھی آہٹوں کا گزر نہ ہو

یہ غزل کہ جیسے ہرن کی آنکھ میں پھیلی رات کی چاندنی
نہ بجھے خرابے کی روشنی کبھی بے چراغ یہ گھر نہ ہو

وہ فراق ہو کہ وصال ہو تری یاد مہکے گی ایک دن
وہ گلاب بن کے کھلے گا کیا جو چراغ بن کے جلا نہ ہو

کبھی دھوپ دے کبھی بدلیاں دل و جاں سے دونوں قبول ہیں
مگر اس نگر میں نہ قید کر جہاں زندگی کی ہوا نہ ہو

کبھی دن کی دھوپ میں جھول کے کبھی شب کے پھول کو چوم کے
یونہی ساتھ ساتھ چلیں سدا کبھی ختم اپنا سفر نہ ہو

مرے پاس مرے حبیب آ ذرا اور دل کے قریب آ
...تجھے دھڑکنوں میں بسا لوں میں کہ بچھڑنے کا کبھی ڈر نہ ہو



Kabhi Yun Bhi Aa Meri Aankh Mein K Meri Nazar Ko Khabar Na Ho
Mujhe Aik Raat Nawaz De Phir Us K Baad Sehar Na Ho

Woh Barra Raheem -O-Kareem Hai Mujhe Yeh Sift Atta Karay
Tujhe Bhoolne Ki Duaa Karoon Tou Meri Dua Mein Asar Na Ho

Mere Bazaou'n Mein Thaki Thaki Abhi  Mehw-E-Khuwaab Hai Zindagi
Na Uthay Sitaaron Ki Paalki Abhi Aahaton Ka Guzar Na Ho

Yeh Ghazal K Jesey Hiran Ki Aankh Mein Phaili Raat Ki Chandni
Na Bujhey Kharabay Ki Roshni Kabhi Be-Charagh Yeh Ghar Na Ho

Woh Firaaq Ho K Visaal Ho Teri Yaad Mehkey Gi Aik Din
Woh Gulaab Ban K Khilay Ga Kia Jo Charaag Ban K Jala Na Ho

Kabhi Dhoop De Kabhi Badliyaan Dil-O-Jaan Se Dono Qubool Hein
Magar Us Nagar Mein Na Qaid Kar Jahan Zindagi Ki Hawa Na Ho

Kabhi Din Ki Dhool Mein Jhool K Kabhi Shab K Phool Ko Choom K
Youn He Sath Sath Chalein Sada Kabhi Safar Apna Khatam Na Ho

Meray Paas Meray Habeeb Aa Zara Aur Dil K Qareeb Aa
Tujhe Dharkano Mein BasaLon Mein K Bicharne Ka Kabhi Dar Na Ho. 

 Please Do Click g+1 Button If You Liked The Post & Share It.
Get Free Updates in your Inbox
Follow us on:
facebook twitter gplus pinterest rss

4 comments:

Thanks For Nice Comments.