Wednesday, 16 January 2013

Pin It

Widgets

Bandh Len Hath Pe. باندھ لیں ہاتھ سینے پہ سجالیں تم کو






باندھ لیں ہاتھ پہ سینے پہ سجالیں تم کو
جی میں آتا ہے کہ تعویذ بنا لیں تم کو

پھر تمہیں روز سنواریں تمہیں بڑھتا دیکھیں
کیوں نہ آنگن میں چنبیلی سا لگا لیں تم کو
 
کبھی خوابوں کی طرح آنکھ کے پردے میں رہو
کبھی خواہش کی طرح دل میں بُلا لیں تم کو
 
جس طرح رات کے سینے میں ہے مہتاب کا نور
اپنے تاریک مکانوں میں سجا لیں تم کو
 
کیا عجب خواہشیں اُٹھتی ہیں ہمارے دل میں
کر کے منا سا ہواؤں میں اُچھالیں تم کو

ہے تمہارے لیے کچھ ایسی عقیدت دل میں
اپنے ہاتھوں میں دعاؤں سا اٹھالیں تم کو

جان دینے کی اجازت بھی نہیں دیتے ہو
ورنہ مر جائیں ابھی مر کے منا لیں تم کو
اس قدر تم پہ ہمیں ٹوٹ کے  پیار آتا ہے
اپنی بانہوں میں بھریں مار ہی ڈالیں تم کو

اب تو بس ایک ہی خواہش ہے کسی موڑ پر تم
ہم کو بکھرے ہوے مل جاؤ سنبھالیں تم کو
 

Baandh Len Hath Pe Seene Pe Saja Len Tum Ko
G Men Aata Hai K Taweez Bana Len Tum Ko ,

Phir Tumhe Roz Sanwarein Tumhe Barhta Dekhein
Q Na Aangan Men Chambeli Sa Laga Len Tum Ko ,

Kabhi Khuwabon Ki Tarah Aankh K Parday Mein Raho
Kabhi Khuwahish Ki Tarah Dil Mein Bula Lein Tum Ko

Jis Tarah Raat K Seene Mein Hai Mehtab Ka Noor
Apne Haathon Mein Duaon Sa Utha Len Tum Ko ,

Kia Ajab Khawishein Uthti Hai Humare Dil Mein
Kar K Munna Sa Hawaon Mein Uchalein Tum Ko ,

Is Qadar Tum Pe Humein Toot K Pyar Aata Hai
Apni Bahon Mein Bharein Maar He Dalein Tum Ko ,

Hai tumhare Liye Kuch Aisi Aqeedat Dil Men
Apne Hathon Men Duaon Sa Utha Len Tum Ko ,

Jaan Deney Ki Ijazat Bhi Nahi Detey Ho
Warna Mar Jaein Abhi Mar K Mana Len Tum Ko ,

Ab To Bus Aik He Khuwahish Hai Kisi Morr Per Tum
Hum Ko Bikhre Huey Mil Jao Sambhalein Tum Ko...!!!



 Please Do Click g+1 Button If You Liked The Post & Share It
Get Free Updates in your Inbox
Follow us on:
facebook twitter gplus pinterest rss

No comments:

Post a Comment

Thanks For Nice Comments.