Thursday, 10 January 2013

Pin It

Widgets

Rooh Ko Hijar K Kanton Se ..روح کو ہجر کے کانٹوں سے


روح کو ہجر کے کانٹوں سے گزارے تو سہی
وہ تو خود چاہتا ہے کوئی پکارے تو سہی

پھر یہ دیکھے کہ بھلا کون ہے کتنا گہرا
دل کوئی گہرے سمندر میں اتارے تو سہی

وہ مری طرح ریاضت تو کرے مرنے کی
وہ مری طرح تمناؤں کو مارے تو سہی

پھر میں اک ہنستی ہوئی صبح اسے لا کر دوں
رات وہ میرے لیے رو کے گزارے تو سہی

زند گی جنگ ہے اس جنگ کو جیتے تو سہی
زندگی کھیل ہے اس کھیل میں ہارے تو سہی..

Rooh Ko Hijar K Kanton Se Guzare Tou Sahi
Woh Tou Khud Chahta Hay,Koi Pukare Tou Sah

Phir Yeh Dekhe K Bhala Kon Hay Kitna Gehra
Dil Koi Gehre Samandar Men Utarey Tou Sahi

Woh Meri Tarha Riyazat Tou Kare Marne Ki
 Woh Meri Tarha , Tamannaon Ko Marey Tou Sahi

Phir Men Ik Hansti Hui Subha Usay La Kar Doon
Raat Woh Mere Liye Ro Kar Guzare Tou Sahi 

Zindagi Jung Hay , Is Jung Ko Jeetye Tou Sahi
Zindagi Khail Hay , Is Khail Men Haarey tou Sahi...



Please Do Click g+1 Button If You Liked The Post & Share It


Get Free Updates in your Inbox
Follow us on:
facebook twitter gplus pinterest rss

No comments:

Post a Comment

Thanks For Nice Comments.