Tuesday, 8 January 2013

Pin It

Widgets

Tumhare Qafilay Ka........تمہارے قافلے کا ہر گھڑی منظر بدلتا ہے




تمہارے قافلے کا ہر گھڑی منظر بدلتا ہے
کبھی رہزان بدلتا ہے کبھی رہبر بدلتا ہے

لباسِ فکيرا کی آرزو تو سب کو ہے لیکن
کہاں ملبوس کے اندر کوئی پیکر بدلتا ہے

تم ایک انسان کے بدلے ہوے تیور پے حیران ہو
یہ وہ موسم ہے کے پنچھی بھی اپنے پر بدلتا ہے

چٹانوں سے اُسے میں نے محبّت سے تراشا ہے
بس اب یہ دیکھنا ہے کے رنگ پتھر کب بدلتا ہے

اسے تو شوق ہے یوں ہر دل میں جا کے ٹھہرنے کا
وہ کچھ ہی روز میں اکتا کے اپنا گھر بدلتا ہے

اگر مالک کے در سے جانور جاتا نہیں تو پھر
یہ انسان کیسا انسان ہے جو اتنے در بدلتا ہے

Tumhare Qafilay Ka Her Gharri Manzar Badalta Hay
Kabhi Rehzan Badalta Hay, Kabhi Rehbar Badalta Hay ,


Libaas-e-Fakeera Ki Aarzoo Tou Sab Ko Hay Lekin
Kahan Malboos K Andar Koi Paiker Badalta Hay ,

Tum Ek Insaan Ke Badlay Huey Taiwar Pay Hairaan Ho
Ye Woh Mosam Hay K Panchi Bhi Apnay Par Badalta Hay ,

Chatanon Se Usay Mein Ne Muhabbat Se Tarasha Hay
Bas Ab Ye Dekhna Hay K Rang Pathar Kab Badalta Hay ,

Usay Tou Shoq Hay Yun Her Dil Men Ja Ke Theherney Ka
Woh Kuch Hi Roz Main Ukta Ke Apna Ghar Badalta Hay ,

Agar Malik K Dar Se Janwar Jata Nahi Tou Phir
Ye Insaan Kesa Insaan Hay Jo Itne Dar Badalta Hay....




Please Do Click g+1 Button If You Liked The Post & Share It



 


Get Free Updates in your Inbox
Follow us on:
facebook twitter gplus pinterest rss

No comments:

Post a Comment

Thanks For Nice Comments.