Friday, 8 February 2013

Pin It

Widgets

Dil Tha K Khush Khayal دل تھا کہ خُوش خیال


tujhe dekh kar

دل تھا کہ خُوش خیال تجھے دیکھ کر ہُوا
یہ شہر بے مثال تجھے دیکھ کر ہُوا

اپنے خلاف شہر کے اندھے ہجوم میں
دل کو بہت ملال تجھے دیکھ کر ہُوا

طُولِ شبِ فراق تری خیر ہو کہ دل
آمادۂ وصال تجھے دیکھ کر ہُوا

یہ ہم ہی جانتے ہیں جُدائی کے موڑ پر
اِس دل کا جو بھی حال تجھے دیکھ کر ہُوا

آئی نہ تھی کبھی مِرے لفظوں میں روشنی
اور مُجھ سے یہ کمال تجھے دیکھ کر ہُوا

بچھڑے تو جیسے ذہن معطّل سا ہو گیا
شہرِ سخن بحال تجھے دیکھ کر ہُوا

پھر لوگ آ گئے مِرا ماضی کُریدنے
پھر مُجھ سے اَک سوال تجھے دیکھ کر ہُوا

Dil Tha K Khush Khayal Tujhe Daikh Kar Hova
Ye Shehar Be Misaal Tujhe Daikh Kr Howa..

Apne Khilaaf Shehar K Andhay Hujoom Main
Dil Ko Bohat Malaal Tujhe Daikh Kar Howa

Tol-e-Shab-e-Firaaq Teri Khair Ho K Dil
Aamada-e-Misaal Tujhe Daikh Kar Howa

Yeh Hum He Jante Hen K Judai K Morr Par
Is Dil Ka Jo Bhi Haal Tujhe Daikh Kar Howa

Ai Na Thi Kabhi Mere Lafzon Main Roshni..
Or Mujh Se Ye Kamaal Tujhe Daikh Kar Howa

Bichre Tou Jese Zehan Muattal Sa Ho Gaya
Shehr-e-Sukhan Bahaal Tujhe Daikh Kar Howa

Phir Log Aa Gaey Mera Maazi Kuraidnay
Phir Mujh Se Ik Sawal Tujhe Daikh Kar Howa..


Please Do Click g+1 Button If You Liked The Post  & Share It

 
Get Free Updates in your Inbox
Follow us on:
facebook twitter gplus pinterest rss

1 comment:

Thanks For Nice Comments.