Wednesday, 6 February 2013

Pin It

Widgets

Hay Zara Sa Safar Guzara Kar ہے ذرا سا سفر، گزارا کر




IMAGEDESCRIPTION


ہے ذرا سا سفر، گزارا کر
چند لمحے فقط گوارا کر

دھوپ میں نظم بادلوں پر لکھ
کوئی پرچھائیں استعارا کر

چھوئی موئی کی ایک پتی ہوں
دور ہی سے میرا نظارہ کر

آسمانوں سے روشنی جیسا
مجھ پہ الہام اک ستارا کر

پہلے دیکھا تھا جس محبت سے
اک نظر پھر وہی دوبارہ کر

کھو نہ جائے غبار میں نیناں
مجھ کو اے زندگی پکارا کر




Hay Zara Sa Safar Guzara Kar
Chand Lamhe Faqat Gawara Kar

Dhoop Men Nazm Baadlon Pe Likh
Koi Parchaein Ista’ara Kar

Chooi Mooi Ki Aik Patti Hon
Door He Se Mera Nazara Kar

Aasmano Se Roshni Jesa
Mujh Pe Ilhaam Ik Sitara Kar

Pehle Dekha Tha Jis Mohabbat Se
Ik Nazar Phir Wohi Dobara Kar

Kho Na Jaen Gubaar Men Naina
Mujh Ko A Zindagi Pukara Kar..



Please Do Click g+1 Button If You Liked The Post  & Share It


Get Free Updates in your Inbox
Follow us on:
facebook twitter gplus pinterest rss

No comments:

Post a Comment

Thanks For Nice Comments.