Sunday, 3 February 2013

Pin It

Widgets

Khud Apne Dil Mein خود اپنے دل میں


خود اپنے دل میں خراشیں اتارنا ہوں گی
ابھی تو جاگ کے راتیں گزارنا ہوں گی

تیرے لئے مجھے ہنس ہنس کے بولنا ہو گا
میرے لئے تجھے زلفیں سنوارنا ہوں گی

تیری صدا سے تجھی کو تراشنا ہو گا
ہوا کی چاپ سے شکلیں ابھارنا ہوں گی

ابھی تو تیری طبیعت کو جیتنے کے لئے
دل و نگاہ کی شرطیں بھی ہارنا ہوں گی

تیرے وصال کی خواہش کے تیز رنگوں سے
تیرے فراق کی صبحیں نکھارنا ہوں گی

یہ شاعری یہ کتابیں یہ آیتیں دل کی
نشانیاں یہ سبھی تجھہ پے وارنا ہوں گی


Khud Apne Dil Mein Kharashein Utaarna Hon Gi
Abhi Tou Jaag K Raatein Guzaarna Hon Gi

Tere Liye Mujhe Hans Hans K Bolna Ho Ga
Mere Liye Tujhe Zulfein Sanwarna Hon Gi

Teri Sada Se Tujhi Ko Taraashna Ho Ga
Hawa Ki Chaap Se Shaklein Ubhaarnna Hon Gi

Abhi Tou Teri Tabiyat Ko Jeetney Ke Liye
Dil-o-Nigah Ki Shartein Bhee Haarna Hon Gi

Tere Wisaal Ki Khuwahish Ke Taiz Rangon Se
Tere Firaaq Ki Subhein Nikhaarna Hon Gi

Yeh Shaairi Yeh Kitaabein Yeh Aayatein Dil Ki
Nishaniyaan Yeh Sabhi Tujj Pe Waarna Hon Gi...




Please Do Click g+1 Button If You Liked The Post  & Share It

Get Free Updates in your Inbox
Follow us on:
facebook twitter gplus pinterest rss

No comments:

Post a Comment

Thanks For Nice Comments.