Tuesday, 26 March 2013

Pin It

Widgets

Faaslay K Ma’ani Ka Kiun Faraib Khate Ho

Faaslay K Maani

فاصلے کے معنی کا کیوں فریب کھاتے ہو
جتنے دور جاتے ہو، اتنے پاس آتے ہو

رات ٹوٹ پڑتی ہے جب سکوتِ زنداں پر
تم مرے خیالوں میں چھپ کے گنگناتے ہو

میری خلوتِ غم کے آہنی دریچوں پر
اپنی مسکراہٹ کی مشعلیں جلاتے ہو

جب تنی سلاخوں سے جھانکتی ہے تنہائی
دل کی طرح پہلو سے لگ کے بیٹھ جاتے ہو

تم مرے ارادوں کے ڈوبتے ستاروں کو
یاس کی خلاؤں میں راستہ دکھاتے ہو

کتنے یاد آتے ہو، پوچھتے ہو کیوں مجھ سے
جتنا یاد کرتے ہو اُتنے یاد آتے ہو


Faaslay K Ma’ani Ka Kiun Faraib Khate Ho
Jitne Door Jate Ho, Utne Paas Aate Ho

Raat Toot Parti Hai Jab Sakoon-e-Zindaan Par
Tum Mere Khayalon Men Chup K Gungunate Ho

Meri Khalwat-e-Gham K Aahani Dareechon Par
Apni Muskurahat Ki  Mash’alein Jalate Hon

Jab Tani Salakhon Se Jhaankti Hai Tanhai
Dil Ki Tarha Pehlu Se Lag K Beth Jate Ho

Tum Mere Irdaon K Doobte Sitaron Ko
Yaas Ki Khalaon Men Raasta Dikhate Ho

Kitne Yaad Aate Ho Poochte Ho Kiun Mujh Se
Jitna Yaad Karte Ho, Utna Yaad Aate Ho……….


Please Do Click g+1 Button If You Liked The Post  & Share It

Get Free Updates in your Inbox
Follow us on:
facebook twitter gplus pinterest rss

No comments:

Post a Comment

Thanks For Nice Comments.