Saturday, 16 March 2013

Pin It

Widgets

Gubar-e-Chashm Hai yeh Men Tou Ashkbaar Nahi

Alag Hai Baat



غبار چشم ہے يہ، ميں تو اشکبار نہيں
الگ ہے بات ديا گل نے بھي قرار نہيں

مجھے زمانے نے لوٹا نہ تھا کبھي ايسے
جو ہجر تجھ سے ملا اس کا کچھ شمار نہيں

مجھے صليب پہ ٹانکو ہزار بار مگر
خدا گواہ ہے ميں کچھ گناہ گار نہيں

بجا کہ چہرے سے غمگين دکھائي ديتي ہوں
مگر جو دل پہ گزرتي ہے آشکار نہيں

چراغ اشک جلاؤ، انہيں نہ بجھنے دو
ہوا اگر چہ زمانے کي ساز گار نہيں

مرا وجود گوارا نہ کر سر محفل
تري نگاہ ميں ميرا کوئي وقار نہيں


Gubar-e-Chashm Hai Yeh Men Tou Ashkbaar Nahi
Alag Hai Baat  Diya Gul Ne Bhi Qaraar Nahi

Mujhe Zamane Ne Loota Tha Kabhi Aisay
Jo Hijr Tujhse Mila Us Ka Kuch Shumaar Nahi

Mujhe Saleeb Pe Taanko Hazaar Baar Magar
Khuda Gawah Hay Men Kuch Gunehgaar Nahi

Baja K Chehre Se Ghamgeen Dikhaee Deti Hoon
Magar Jo Dil Pe Guazarti Hai Aashkaar Nahi

Charag-e-Ashk Jalao Ineh Na Bujhne Do
Hawa Agar Chay Zamane Ki Saazgaar Nahi

Mera Wajood Gawara Na Kar Sar-e-Mehfil
  Teri Nigha Men Mera Koi Waqaar Nahi…


Please Do Click g+1 Button If You Liked The Post  & Share It

Get Free Updates in your Inbox
Follow us on:
facebook twitter gplus pinterest rss

3 comments:

Thanks For Nice Comments.