Thursday, 21 March 2013

Pin It

Widgets

Har Pal Dhiyaan Men Basne Walay Log , Afsane Ho Jate Hen


Afsane Ho Jate


ہر پل دھیان میں بسنے والے لوگ افسانے ہو جاتے ہیں
آنکھیں بوڑھی ہو جاتی ہیں خواب پرانے ہو جاتے ہیں

ساری بات تعلق والی جذبوں کی سچائی تک ہے
میل دلوں میں آجائے تو گھر ویرانے ہو جاتے ہیں

منظر منطر کھل اٹھتی ہے پیراہن کی قوس قزح
موسم تیرے ہنس پڑنے سے اور سہانے ہو جاتے ہیں

جھونپڑیوں میں ہر اک تلخی پیدا ہوتے مل جاتی ہے
اسی لیے تو وقت سے پہلے طفل سیانے ہوجاتے ہیں

موسم عشق کی آہٹ سے ہی ہر اک چیز بدل جاتی ہے
راتیں پاگل کردیتی ہیں دن دیوانے ہو جاتے ہیں

دنیا کے اس شور نے امجد کیا کیا ہم سے چھین لیا ہے
خود سے بات کیے بھی اب تو کئی زمانے ہو جاتے ہیں

Har Pal Dhiyaan Men Basne Walay Log , Afsane Ho Jate Hen
Aankhein Borreeh Ho Jati Hen Khuwaab Purane Ho Jate Hen

Sari Baat Ta’alluq Wali Jazbon Ki Sachai Tak Hai
Mail Dilon Men Ajaey Tou Ghar Virane Ho Jate Hen

Manzar Manzar Khil Uthti Hai Pairahan Ki Qos-e-Qazah
Mosam Tere Hans Parne Se,  Aur Suhaane Ho Jate Hen

Jhonparriyon Men Har Aik Talkhi Paida Hote Mil jati Hai
Is Liye Tou Waqt Say Pehle, Tifl Siyane Ho Jate Hen

Mosam-e- Ishq Ki Aahat Se He Har Ik Cheez Badal Jati Hai
Raatein Pagal Kar Deti Hen , Din Diwane Ho Jate Hen

Dunya K Is Shor Ne Amjad, Kia Kia Hum Se Cheen Liya Hai
Khud Se Baat Kiye Bhi Ab Tou Kai Zamane Ho Jate Hen…..


Please Do Click g+1 Button If You Liked The Post  & Share It



Get Free Updates in your Inbox
Follow us on:
facebook twitter gplus pinterest rss

1 comment:

Thanks For Nice Comments.