Tuesday, 2 April 2013

Pin It

Widgets

Aankhon Se Door Ho Gaya Woh Jhoot Bol K

Darwaza Khol K

آنکھوں سے دور ہو گیا جو جھوٹ بول کے
میں راہ دیکھتی رہی دروازہ کھول کے

اب سوچتی ہوں میں کہ یہی میری بھول تھی
دیکھا نہیں جو اس کو ترازو میں تول کے

وہ جلد باز اس طرح واپس ہوا کہ ہم
مفہوم بھی سمجھ نہ سکے میل جول کے

اس بےوفا کے واسطے خود کو کروں تباہ
پاگل تو میں نہیں کہ پیوں زہر گھول کے

چاروں طرف ہے ایک اندھیرا سا اے انا
اس کے بغیر لگتے ہیں دن تارکول کے


Abkhon Se Door Ho Gaya Woh Johoot Bol K
Men Raah Dekhti Rahi, Darwaza Khol K

Ab Sochti Hoon Men K Yehi Meri  Bhool Thi
Dekha Nahi Jo Us Ko, Tarazoo Men  Toll K

Woh  Jald-Baaz Is Tarha Wapas Hua K Hum
Mafhoom Bhi Samjh Na Sake, Mail Jol K

Us Bewafa K Waaste Khud Ko Karon Tabah
Pagal Tou Men Nahi K Piyon Zehar Ghol K

Chaaron Taraf Hai Aik Andhera Sa Ay Anna
Us K Bagair Lagte Hen Din Taar-Kol  K…….


Please Do Click g+1 Button If You Liked The Post  & Share It




Get Free Updates in your Inbox
Follow us on:
facebook twitter gplus pinterest rss

2 comments:

  1. Latest Urdu Sad Poetry , & SMS Collection

    ReplyDelete
  2. kis bawalay shair ka kahani hay ya

    ReplyDelete

Thanks For Nice Comments.