Wednesday, 3 April 2013

Pin It

Widgets

Tootey Huey Lafzon Men Rawani Nahi Milti


Lamhon Men Tou

ٹُوٹے ھوے لفظوں میں روانی نہیں ملتی
لمحوں میں تو صدیوں کی کہانی نہیں ملتی

دل جل گیا اب اس میں دھواں تک نہیں اُٹھتا
اس راکھ سے تصویر پُرانی نہیں ملتی
...
اظہار پہ تالے ھیں تو تالے ہی سمجھنا
ھر لکھی ھوئ بات زبانی نہیں ملتی

جو مانگو مقدر سے ھمیں وہ نہیں ملتا
اس دور میں راجہ کو بھی رانی نہیں ملتی

باقی نہیں خاروں میں بھی پہلی سی چبھن اب
اور پھولوں پہ پہلی سی جوانی نہیں ملتی

سوچا تھا کسی شام سہانی کو ملیں گے
اور شام ھمیں کوئ سہانی نہیں ملتی

Tootey Huey Lafzon Men Rawaani Nahi Milti
Lamhon Men Tou Sadyon Ki Kahani Nahi Milti

Dil Jal Gaya Ab Is Men Dhuwaan Tak Nahi Uthta
Is  Raakh Say Tasveer Puraani Nahi Milti

Izhaar Pe Taalay Hen Tou Taalay He Samajhna
Har  Likhi  Hui  Baat Zubaani  Nahi  Milti

Jo Maango Muqaddar Se Hame Woh Nahi Milta
Is  Dour  Men  Raja  Ko  Bhi  Rani  Nahi  Milti

Baqi Nahi Khaaron Men Pehli Si Chubhan Ab
Aur  Phoolon  Pe  Pehli  Si  Jawani  Nahi Milti

Socha Tha Kisi Shaam Suhani Ko Milen Gay
Aur Shaam Hame Koi, Suhaani Nahi Milti…..


Please Do Click g+1 Button If You Liked The Post  & Share It


Get Free Updates in your Inbox
Follow us on:
facebook twitter gplus pinterest rss

No comments:

Post a Comment

Thanks For Nice Comments.