Tuesday, 30 April 2013

Pin It

Widgets

Tumeh Nikaal Kar Dekha Tou Sab Khasara Hai...............

Sab Khasara Hai

حسابِ عمر کا اتنا سا گوشوارا ہے
تمہیں نکال کے دیکھا تو سب خسارا ہے

کسی چراغ میں ہم ہیں کسی کنول میں تم
کہیں جمال ہمارا کہیں تمہارا ہے

وہ کیا وصال کا لمحہ تھا جس کے نشے میں
تمام عمر کی فرقت ہمیں گوارا ہے

ہر اک صدا جو ہمیں بازگشت لگتی ہے
نجانے ہم ہیں دوبارہ کہ یہ دوبارہ ہے

وہ منکشف مری آنکھوں میں ہو کہ جلوے میں
ہر ایک حُسن کسی حُسن کا اشارہ ہے

عجب اصول ہیں اس کاروبارِ دُنیا کے
کسی کا قرض کسی اور نے اُتارا ہے

نجانے کب تھا! کہاں تھا مگر یہ لگتا ہے
یہ وقت پہلے بھی ہم نے کبھی گزارا ہے

یہ دو کنارے تو دریا کے ہو گئے ، ہم تم
مگر وہ کون ہے جو تیسرا کنارا ہے



Hisab-e-Umr Ka Itna Sa Goshwara Hai
Tumeh Nikaal Kar Dekha Tou Sab Khasara Hai

Kisi Charaag Mein Hum Hein, Kisi Kanwal  Mein Tum
Kaheen Jamaal Tumhara, Kaheen Hamara Hai

Woh Kia Visaal Ka Lamha Tha,  Jis K Nashay Mein
 Tamaam Umr Ki Furqat Hame Gawara Hai

Har Ik Sada Jo Hame Baazgasht  Lagti Hai
Na Jane Hum Hein Dobara  K, Yeh Dobara Hai

Woh Munkashif Meri Aankhon Mein Ho, K Jalway Mein
Har Aik Husn , Kisi Husn Ka Ishara Hai

Ajab Usool Hein Is Kaarobar-e-Dunya K
Kisi Ka Qarz , Kisi Aur Ne Utara Hai

Na Jane Kab Tha Kahan Tha, Magar Yeh Lagta Hai
Yeh Waqt Pehle Bhi Hum Ne Kaheen Guzara Hai

Yeh Do Kinare Tou Darya K Hogaey, Hum Tum
Magar Woh Kon Hai Jo Teesra Kinara Hai..................


 Please Do Click g+1 Button If You Liked The Post  & Share It

Get Free Updates in your Inbox
Follow us on:
facebook twitter gplus pinterest rss

No comments:

Post a Comment

Thanks For Nice Comments.