Tuesday, 14 May 2013

Pin It

Widgets

Mujhe Aisa Lutf Ataa Kiya, Jo Hijr Tha Na Visaal Tha,..


 
Mere Mosamon K

مجھے ایسا لطف عطا کیا، جو ہجر تھا نہ وصال تھا
مرے موسموں کے مزاج داں، تجھے میرا کتنا خیال تھا

کسی اور چہرے کو دیکھ کر، تری شکل ذہن میں آگئی
تیرا نام لے کے ملا اسے، میرے حافظے کا یہ حال تھا

کبھی موسموں کے سراب میں، کبھی بام و در کے عذاب میں
وہاں عمر ہم نے گزار دی، جہاں سانس لینا مُحال تھا

کبھی تُو نے غور نہیں کیا، کہ یہ لوگ کیسے اُجڑ گئے؟
کوئی میر جیسا گرفتہ دل، تیرے سامنے کی مثال تھا

تیرے بعد کوئی نہیں ملا، جو یہ حال دیکھ کے پوچھتا
مجھے کس کی آگ جُھلسا گئی؟ میرے دل کو کس کا مَلال تھا؟

کہیں خون دل سے لکھا تو تھا، تیرے سال ہجر کا سانحہ
وہ ادھوری ڈائری کھو گئی، وہ نجانے کون سا سال تھا؟




Mujhe Aisa Lutf Ataa Kia, Jo Na Hijr Tha Na Visaal Tha
Mere Mosamo K Mijaaz Daan, Tujhe Mera Kitna Khayal Tha

Kisi Aur Chehre Ko Dekh Kar, Teri Shakl Zehan Mein Aagaie
Tera Naam Lay K Mila Usay, Mere Haafzay Ka Yeh Haal Tha

Kabhi Mosamon K Saraab Mein, Kabhi Baam-o-Dar K Azaab Mein
Wahan Umr Hum Ne Guzaar Di , Jahan Saans Lena Muhaal Tha

Kabhi Tu Ne Gour Nahi Kia, K Yeh Log Kese Ujarr Gaey ?
Koi Mere Jesa Girafta Dil, Tere Samne Ki Misaal Tha

Tere Baad Koi Nahi Mila, Jo yeh Haal Dekh K Poochta
Mujhe Kis Ki Aag Jhulsa Gaie? Mere Dil Ko Kis Ka Malaal Tha

Kaheen Khoon-e-Dil Se Likha Tou Tha, Tere Saal-e-Hijr Ka Aaiena
Woh Adhoori Dairy Khoo Gaie, Woh Na Jane Konsa Saal Tha,,,......




Please Do Click g+1 Button If You Liked The Post  & Share It

Get Free Updates in your Inbox
Follow us on:
facebook twitter gplus pinterest rss

No comments:

Post a Comment

Thanks For Nice Comments.