Friday, 10 May 2013

Pin It

Widgets

Nigahon K tasadum Se Ajab Takraar Karti Hai....

Romantic Urdu Poetry

نگاہوں کے تصادم سے عجب تکرار کرتی ہے
یقیں کامل نہیں لیکن، گماں ہے پیار کرتی ہے

لرز جاتا ہوں یہ سوچ کے کافر نہ ہو جائوں
طبیعت اس کی پوجا کے لیے بڑا اسرار کرتی ہے

اُسے معلوم ہے شاید میرا دل ہے نشانے پر
لبوں سے کچھ نہیں کہتی، نظر سے وار کرتی ہے

میں اس سے پوچھتا ہوں خواب میں،مجھ سے محبت
پھر آنکھیں کھول دیتا ہوں وہ جب انکار کرتی ہے


Nigahon K Tasadum Se Ajab Takraar Karti Hai
Yaqeen Kamil Nahi Lekin, Gumaan Hai Piyar Karti Hai

Larz Jata Hoon Yeh Soch K , Kafir Na Ho Jaon
Tabiat Uski Pooja K Liyeh, Bara Israar Karti Hai

Usay Maloom Hai Shayad, Mera Dil Hai Nishane Par
Labon Se Kuch Nahi Kehti, Nazar Se Waar Karti Hai

Mein Us Se Poochta Hoon Khuwan Mein, Mujhse Mohabbat Hai
Phir Aankhein Khol Deta Hoon, Jab Woh Inkaar Karti Hai.............



Please Do Click g+1 Button If You Liked The Post  & Share It

Get Free Updates in your Inbox
Follow us on:
facebook twitter gplus pinterest rss

1 comment:

Thanks For Nice Comments.