Thursday, 2 May 2013

Pin It

Widgets

Tark-e-Ta'alluqat Pay Roya Na Tu Na Mein....



Soya Na Tu Na

ترکِ تعلقات پہ رویا نہ تو ، نہ میں
لیکن یہ کیا کہ چین سے سویا،نہ تو ، نہ میں

حالات کے طلسم نے پتھرا دیا مگر
بیتے سمے کی یاد میں رویا ، نہ تو، نہ میں

ہرچند اختلاف کے پہلو ہزار تھے
وا کر سکا مگر لب گویا ، نہ تو ، نہ میں

نوحے فصیلِ ضبط سے اونچے نہ ہو سکے
کُھل کر دیارِ سنگ میں رویا ، نہ تو ، نہ میں

جب بھی نظراُٹھی تو فلک کی طرف اُٹھی
برگشتہ آسمان سے گویا نہ تو نہ میں

Tark-e-Ta’alluqat Pay , Roya Na Tu Na Mein
Lekin Yeh Kia K, Chain Se Soya Na Tu Na Mein

Halaat K Tillisim Ne , Pathra Diya Magar
Beetay Samay Ki Yaad Mein, Roya Na Tu Na Mein

Har Chand Ikhtalaaf k Pehlu Hazaar Thay
Waakar Saka Magar, Lab-e-Goya Na Tu Na Mein

Nohay Faseel-e-Zabt Se Oonchay Na Ho Sakay
Khul Kar Dayar-e-Sung Mein, Roya Na Tu Na Mein

Jab Bhi Nazar Uthi Tou, Falak Ki Taraf Uthi
Bargashta Aasmaan Se , Goya Na Tu Na Mein..


 Please Do Click g+1 Button If You Liked The Post  & Share It



Get Free Updates in your Inbox
Follow us on:
facebook twitter gplus pinterest rss

No comments:

Post a Comment

Thanks For Nice Comments.