Monday, 13 May 2013

Pin It

Widgets

Tumeh Jo Mere Gham-e-Dil Se Aa-Gahee Ho Jaey,...

Aankh Shabnami Hojaey

تمھیں جو میرے غم. دل سے آگہی ہوجائے
جگر میں پھول کِھلیں ، آنکھ شبنمی ہوجائے

اجل بھی اُس کی بلندی کو چھو نہی سکتی
وہ زندگی جسے احساسِ زندگی ہوجائے

یہی ہے دل کی ہلاکت ، یہی ہے عشق کی موت
نگاہِ دوست پہ اظہارِ بیکسی ہوجائے

زمانہ دوست ہے کس کس کو یاد رکھوگے
خدا کرے کہ تمھیں مجھ سے دشمنی ہوجائے

سیاہ خانہء دل میں ہے ظلمتوں کا ہجوم
چراغِ شوق جلاو کہ روشنی ہوجائے

اجل کی گود میں قابل ہوئی ہے عمر تمام
عجب نہیں کہ مری موت زندگی ہوجائے


Tumeh Jo Mere Gham-e-Dil Se Aa-Gahee Ho Jaey
Jigar Mein Phool Khilen, Aankh Shabnami Ho Jaey

Ajal Bhi Uski Bulandi Ko  Chhu Nahi Sakti
Woh Zindagi Jisay Ehsas-e-Zindagi Ho Jaey

Yehi Hai Dil Ki Halakat, Yehi Hai Ishq Ki Mout
Nigah-e-Dost Pay Izhar-e-Be-Kasi Ho Jaey

Zamana Dost Hai Kis Kis Ko Yaad Rakho Gay
Khuda Kare Tumeh Mujhse Dukshmani Ho Jaey

Siyah Khana-e-Dil mein Hai Zulmaton Ka Hujoom
Charag-e-Shoq Jalao K Roshni Ho Jaey

Ajal Ki Goud Mein Qabil Hui Hai Umr Tamaam
Ajab Nahi K Meri Mout Zindagi Ho Jaey......



Please Do Click g+1 Button If You Liked The Post  & Share It

Get Free Updates in your Inbox
Follow us on:
facebook twitter gplus pinterest rss

No comments:

Post a Comment

Thanks For Nice Comments.