Wednesday, 26 June 2013

Pin It

Widgets

Dil Khoon Ho Tou, Kiun Kar Na Lahoo Aankh Se Barsay..


Ujrray Huey Ghar

دل خون ہو توکیوں کرنہ لہوآنکھ سے برسے
 آخر کو تعلق ہے اسے دیدہ تر سے

 کچھ دیر تو اس قلب شکستہ میں بھی ٹھہرو
 یوں تو نہ گزر جاو اس اجڑے ہوئے گھر سے

 ہر موج سے طوفانِ حوادث کی حدی خواں
 مشکل ہے نکلنا مری کشتی کا بھنور سے

 یہ حسن یہ شوخی یہ تبسم یہ جوانی
 اللہ بچائے تمہیں بد بیں کی نظر سے

 خورشید تو کیا ، غیرت خورشید ہوا ہے
 وہ ذرہ جو ابھرا ہے تری راہگزر سے

 نکلی نہ جو دیدار کی حسرت تو یہ ہوگا
 سر پھوڑ کے مر جائیں گے دیوار سے،در سے

 سو رنج ہیں ، سو شکوہ شکایات ہیں ، لیکن
 مجبور ہیں ، کچھ کہتے نہیں آپ کے ڈر سے

 صیاد ! خدا خیر کرے اہل چمن کی
 دیکھے ہیں فضاوں میں کچھ اڑتے ہوئے پَر سے

 وہ روٹھ گئے ہم سے ، جدا ان سے ہوئے ہم
 اب چھیڑ اٹھے گی نہ اِدھر سے نہ اُدھر سے

 لوگوں کا حسد شعر کی شہرت سے بڑھے گا
 خوف آتا ہے خود مجھ کو نصیر اپنے ہنر سے

Dil Khoon Ho Tou Kiun Kar Na Lahoo Aankh Se Barsay
Aakhir Ko Ta’alluq Hai , Is Deeda-e- Tar Say

Kuch Dair Tou Is Qalb-e-Shikasta Mein Bhi Thehro
Yun Tou Na Guzar Jao Is Ujrray Huey Ghar Se

Har Mouj Se Toofan-E-Hawadis Ki Hadi Khuwaan
Mushkil Hai Nikalna Mera Kashti K Bhanwar Say

Yeh Husn Yeh Shokhi Yeh Tabassum Yeh Jawani
Allah Bachaey Tumeh Bad-Been Ki Nazar Say

Khurshaid Tou Kia, Gairat-e-Khurshaid Hua Hai
Woh Zarra Jo Ubhra Hai Teri Rahguzar Say

Nikli Na Jo Deedar Ki Hasrat Tou Yeh Hoga
Sar Phorr K Mar Jaen Gay, Diwaar Se Dar Say

So Ranj Hein, So Shikway Shikayaat Hein, Lekin
Majboor Heib, Kuch Kehte Nahi Ap K Dar Say

Sayyad ! Khuda Khair Kare Ehl-E-Chaman Ki
Dekhe Hein Fizaoun Mein Kuch Urrtey Huey Par Say

Woh Rooth Gaey Hum Se, Juda Un Se Huey Hum
Ab Chairr Uthay Gi Na Idhar Say Na Udhar Say

Logon Ka Hasad She’ar Ki Shohrat Say Barhay Ga
Khof Aata Hay Khud Mujhko Naseer Apne Hunar Say…



Please Do Click g+1 Button If You Liked The Post  & Share It

Get Free Updates in your Inbox
Follow us on:
facebook twitter gplus pinterest rss

1 comment:

Thanks For Nice Comments.