Monday, 17 June 2013

Pin It

Widgets

Kabhi Shair-o-Nagma Ban, Kabhi Aansoun Men Dhal K

Best Urdu Ghazal

 
کبھی شعر و نغمہ بن کے، کبھی آنسوؤں میں ڈھل کے
وہ مجھے ملے تو لیکن، ملے صورتیں بدل کر

یہ وفا کی سخت راہیں، یہ تمہارے پائے نازک
نہ لو انتقام مجھ سے، مرے ساتھ ساتھ چل کے

وہی آنکھ بے بہا ہے جو غمِ جہاں میں روئے
وہی جام جامِ ہے جو بغیرِ فرق چھلکے

یہ چراغِ انجمن تو ہیں بس ایک شب کے مہماں
تُو جلا وہ شمع اے دل! جو بجھے کبھی نہ جل کے

نہ تو ہوش سے تعارف، نہ جنوں سے آشنائی
یہ کہاں پہنچ گئے ہم تری بزم سے نکل کے

کوئی اے خمار ان کو مرے شعر نذر کر دے
...جو مخالفینِ مخلص نہیں معترف غزل کے

Kabhi Shair-o-Nagma Ban K, Kabhi Aansoun Mein Dhal K
Woh Mujhe Milay Tou Lekin, Milay Sooratein Badal K

Yeh Wafa Ki Sakht Raahein, Yeh Tumhare Paey Nazuk
Na Lo Intaqaam Mujh Se Mere Sath Sath Chal K

Wohi Aankh Be-Baha Hai, Jo Gham-e-Jahan Mein Roey
Woh  He Jaam Jaam Hai Jo, Bagair Farq Chalkay

Yeh Charag-e-Anjuman Tou Hein Bus Aik Shab K Mehmaan
Tu Jala Woh Shamma Ay Dil, Jo Bujhay Kabhi Na Jal K

Na Tou Hosh Se Ta’arruf, Na Junoo Se Aashnaie
Yeh Kahan Pohanch Gaey Hum, Teri Bazm Se Nikal K

Koi Ay Khumaar Unko Mere Shair Nazar Kar Day
Jo Mukhalfeen Mukhlis Nahi Moutaraf Ghazal K….


Please Do Click g+1 Button If You Liked The Post  & Share It

Get Free Updates in your Inbox
Follow us on:
facebook twitter gplus pinterest rss

No comments:

Post a Comment

Thanks For Nice Comments.