Saturday, 29 June 2013

Pin It

Widgets

Rakho Gay Usay Yaad Tou Phir G Na Sako Gay........

Dar Bhool He Jana

رکھو گے اُسے یاد تو پھر جی نہ سکو گے
 گو کام یہ مشکل ہے مگر بھول ہی جانا

 دن کاٹیں گے کس طرح سے کیونکر یہ کٹے رات
 جنگل  میں  ٹھکانہ  ہے تو ڈر بھول ہی جانا

 اب معجزے ہوتے ہی نہیں اپنے جہاں میں
 چاہت کا فسوں اس کا اثر بھول ہی جانا

 تم لاکھ کرو جتن، کٹے گا یہ بہر طور
.. اُس شہر کو جانا ہے تو سر بھول ہی جانا


Rakho Gay Usay Yaad Tou Phir G Na Sako Gay
Go Kaam Yeh Mushkil Hai Magar Bhool Je Jana

Din Kaaten Gay Kis Tarha Se, Q Kar Ye Katay Raat
Jungle Mein Thikana Hai Tou Dar Bhool He Jana

Ab Mojzay Hotay He Nahi Apne Jahan Mein
Chahat Ka Fusoon Uska Asar Bhool He Jana

Tum Lakh Karo Jatan, Katay Gay Yeh Bahar Tor
Us Shehar Ko Jana Hai Tou Sar Bhool He Jana..


Please Do Click g+1 Button If You Liked The Post  & Share It

Get Free Updates in your Inbox
Follow us on:
facebook twitter gplus pinterest rss

1 comment:

Thanks For Nice Comments.