Thursday, 18 July 2013

Pin It

Widgets

Hame Daryaaft Karne Se , Hame Taskheer Karne Tak ... ...

Hame tehreer karne Tak

ہمیں دریافت کرنے سے، ہمیں تسخیر کرنے تک
بہت ہیں مرحلے باقی، ہمیں زنجیر کرنے تک

ہمارے ہجر کے قصّے، سمیٹوگے تو لکھوگے
ہزاروں بار سوچو گے، ہمیں تحریر کرنے تک

ہمارا دل ہے پیمانہ، سو پیمانہ تو چھلکے گا
چلو دو گھونٹ تم بھر لو، ہمیں تاثیر کرنے تک

پرانے رنگ چھوڑو آنکھ کے، اک رنگ ہی کافی ہے
محبّت سے چشم بھر لو، ہمیں تصویر کرنے تک

ہنر تکمیل سے پہلے، مصور بھی چھپاتا ہے
ذرا تم بھی چھپا رکھو، ہمیں تعمیر کرنے تک

وہ ہم کو روز لوٹتے ہیں، اداؤں سے بہانوں سے
  ...  ...  خدا رکھے !  لٹیرے کو، ہمیں فقیر کرنے تک

Hame Daryaaft Karne Se, Hame Taskheer Karne Tak
Bohat Hein Marhaley Baqi , Hame Zanjeer Karne Tak

Hamare Hijr K Qissay , Samaito Gay Tou Likho Gay
Hazaron Baar Socho Gay Hame Tehree Karne Tak

Hamara Dil Hai Paimana , So Paimana Tou Chhalkey Gaa
Chalo Dou Ghoont Tum Bhar Lo, Hame Taaseer Karne Tak

Purane Rung Chorro Aankh K, Ik Rung He Kafi Hai
Mohabbat Se Chashm Bhar Lo , Hame Tasveer Karne Tak

Hunar Takmeel Se Pehle , Musavvir Bhi Chupata Hai
Zara Tum Bhi Chupa Rakho, Hame Taameer Karne Tak

Woh Hum Ko Roz Loot’tay Hein, Adaoun Se Bahano Se
Khuda Rakhay  ! Lutairay Ko , Hame Faqeer Karne Tak .. ..



Please Do Click g+1 Button If You Liked The Post  & Share It

Get Free Updates in your Inbox
Follow us on:
facebook twitter gplus pinterest rss

1 comment:

Thanks For Nice Comments.