Saturday, 28 September 2013

Pin It

Widgets

Us Ne Bhi Bhool Janay Ka Wada Nahi Kia .. ..

Lotnay Ka Irada

ہم نے ہی لوٹنے کا ارادہ نہیں کیا
اس نے بھی بھول جانے کا وعدہ نہیں کیا

دکھ اوڑھتے نہیں کبھی جشنِ طرب میں ہم
ملبوس دل کو تن کا لبادہ نہیں کیا

جو غم ملا ہے بوجھ اٹھایا ہے اس کا خود
سر زیرِ بارِ ساغر و بادہ نہیں کیا

کارِ جہاں ہمیں بھی بہت تھے سفر کی شام
اس نے بھی التفات زیادہ نہیں کیا

آمد پہ تیری عطر و چراغ و سبو نہ ہوں
.. .. اتنا بھی بود و باش کو سادہ نہیں کیا


Hum Ne He Lotney Ka Irada Nahi Kia
Us Ne Bhi Bhool Janey Ka Wada Nahi Kia

Dukh Orhtay Nahi Kabhi Jashan-e Tarb Mein Hum
Malboos-e- Dil Ko Tann Ka Libadah Nahi Kia

Jo Gham Mila Ha Bojh Uthaya Ha Us Ka Khud
Sr Zair-e- Bar-e- Saghar-o-Baadah Nahi Kia

Kaar-e Jahan Hame Bhi Bohat Thay Safar Ki Sham
Us Ne Bhi Iltafaat Ziada Nahi Kia

Aamad Pe Teri Atr-o- Charagh-o-Saboo Na Hon
Itna Bhi Bod-o- Baash Ko Saada Nahi Kia.. ..


Please Do Click g+1 Button If You Liked The Post  & Share It

Get Free Updates in your Inbox
Follow us on:
facebook twitter gplus pinterest rss

No comments:

Post a Comment

Thanks For Nice Comments.