Sunday, 13 October 2013

Pin It

Widgets

Dabi Dabi Si Woh Muskurahat ... ...


Labo'n Pay Apne

دبی دبی سی وہ مسکراہٹ
 لبوں پہ اپنے سجا سجا کے
وہ نرم لہجے میں بات کرنا 
ادا سے نظریں جھکا جھکا کے

وہ آنکھ تیری شرارتی سی
 وہ زلف ماتھے پہ ناچتی سی
نظر ہٹے نہ ایک پل بھی،
 میں تھک گیا ہوں ہٹا ہٹا کے

وہ تیرا ہاتھوں کی اُنگلیوں کو
 ملا کے زلفوں میں کھو سا جانا
حیا کو چہرے پہ پھر سجانا
 پھول سا چہرہ کھلا کھلا کے

وہ ہاتھ حوروں کے گھر ہوں جیسے
 وہ پاؤں پریوں کے پر ہوں جیسے
نہیں تیری مثال جاناں
.... میں تھک گیا ہوں بتا بتا کے۔۔۔


Dabi Dabi Si Woh Muskurahat
Labo’n Pay Apnay Saja Saja K
Wo Naram Lehjay Main Baat Karna
Adab Say Nazrein Jhuka Jhuka K

Woh Aankh Teri Shararti Si
Woh Zulf Mathay Pay Naachti Si
Nazar Hatay Na Aik Pall Bhi
Main Thak Gaya Hun Hata Hata K

Woh Tera Hatho'n Ki Ungliyon Ko
Mila K Zulfo'n Main Kho Sa Jana
Haya K Chehray Pay Phir Sajana
Phool Sa Chehra Khila Khila K

Woh Hath Hooron K Ghar Hon Jaisay
Woh Paaon Paryoun K Par Hon Jaisay
Nahi Hai Teri Misaal Jana
Main Thak Gaya Hoon Bata Bata K … ….


Please Do Click g+1 Button If You Liked The Post  & Share It

Get Free Updates in your Inbox
Follow us on:
facebook twitter gplus pinterest rss

No comments:

Post a Comment

Thanks For Nice Comments.