Friday, 25 October 2013

Pin It

Widgets

Rachi Hui Hai Yeh Kesi Mehak Hawao'n Mein .... ....


رچی ہوئی ہے یہ کیسی مہک ہواؤں میں
میں گھل نہ جاوں کہیں ‌شام کی فضاؤں میں

یہ کس کا عکس مرے آنسووں میں لرزاں ہے
یہ کس کا نام ہے شامل مری دعاؤں میں

چراغ و اطلس و کمخواب ہو گئے ہیں بہم
لگے گی آگ کسی دن حرم سراؤں میں

زمانے والوں سے مایوس ہو گئی شاید
وہ شخص گھورتا رہتا ہے اب خلاؤں میں

میں اڑ تو جاوں فضائے بسیط کی جانب
مگر یہ آہنی زنجیر میرے پاؤں میں

وصال و ہجر کا جھگڑا نہیں ہے میرے لیے
میں جی رہا ہوں محبت کی دھوپ چھاؤں میں

میں اپنے بخت ستارے کے کھوج میں صاحب
 .... ..... تمام عمر بھٹکتا رہا خلاؤں میں




Rachi Hui Hai Yeh Kesi Mehak Hawao'n Mein
Mein Ghul Na Jaon Kaheen Shaam Ki Fizao'n Mein

Yeh Kis Ka Aks Mere Aansoun'n Mein Larzaa'n Hai
Yeh Kis Ka Naam Hai Shamil Meri Duaao'n Mein

Charag-oAtlas-O-Kamkhuwab Hogaey Hein Hum
Lagay Gi Aag Kisi Din Haram Saraao'n Mein

Zamaney Walo'n Se Maayoos Hogayie Shayad
Woh Shakhs Ghoorta Rehta Hai Ab Sarao'n Mein

Mein Urr Tou Jaou’n Fiza-e-Baseet Ki Jaanib
Magar Yeh Aahani Zanjeer Mere Pao’n Mein

Visal-o-Hijr Ka Jhagrra Nahi Hai Mere Liye
Mein G Raha Hoon Mohabbat Ki Dhoop Chaao’n Mein

Mein Apne Bakht Sitarey K Khoj Mein Sahib
Tamaam Umar Bhatakta Raha Khalao’n Mein .... ...

  
Please Do Click g+1 Button If You Liked The Post  & Share It
Get Free Updates in your Inbox
Follow us on:
facebook twitter gplus pinterest rss

No comments:

Post a Comment

Thanks For Nice Comments.