Wednesday, 9 October 2013

Pin It

Widgets

Sukoon Mohaal Hai Amjad Wafa K Rastey Mein .. ..

Hawa K Rastey

    سکوں محال ہے امجد وفا کے رستے م
    کبھی چراغ جلے ہیں ہَوا کے رستے میں ؟

    نجانے اَب کے برس کھیتیوں پہ کیا گُزرے
    کئی پہاڑ کھڑے ہیں گھٹا کے رستے میں

    قدم قدم پہ قدم لڑ کھڑائے جاتے ہیں
    بُتوں کے ڈھیر لگے ہیں خُدا کے رستے میں

    جہانِ نو کو شعُورِ مُسافرت دیں گے
    ہم اپنے خُون سے شمعیں جلا کے رستے میں

    دیارِ اہلِ محبّت میں کِس نے دی آواز
    ہزار ساز بجے ہیں صدا کے رستے میں

    سوائے دردِ محبت، بُجز غبار سَفر
    .. .. کوئی رفیق نہ پایا وفا کے رستے میں

Sukoo'n Mohaal Hai Amjad Wafa K Rastey Mein
Kabhi Charaag Jaley Hein Hawa K Rastey Mein?

Najaney Ab K Barus Khaito'n Pay Kia Guzrey
Kai Pahaarr Kharray Hein Ghata K Rastey Mein

Qadam Qdam Pay Qadam Larrkharaey Jatey Hein
Butto'n K Dhair Lagay Hein Khuda K Rastey Mein

Jahan-e-Nou Ko Shaoor-e-Musafrat Dein Gay
Hum Apne Khoon Se Sham'ay Jala K Rastey Mein

Dayar-e-Ehl-e-Mohabbat Mein Kis Ne Di Awaaz
Hazaar Saaz Bajay Hein Sada K Rastey Mein

Siwaey Dard-e-Mohabbat , Ba-juz Gubar-e-Safar
Koi Rafeeq Na Paya Wafa K Rastey Mein .. ..


Please Do Click g+1 Button If You Liked The Post  & Share It

Get Free Updates in your Inbox
Follow us on:
facebook twitter gplus pinterest rss

No comments:

Post a Comment

Thanks For Nice Comments.