Wednesday, 20 November 2013

Pin It

Widgets

Machal Raha Hai Mera Dil Figaar Honey Ko ... ...

Khizaein Bahaar Honey

مچل رہا ہے مرا دل فگار ہونے کو
ترس رہی ہیں خزائیں بہار ہونے کو

چھلک رہا ہے لہو اشک بن کے آنکھوں سے
کسی کی تشنہ لبی پر نثار ہونے کو

کھڑا ہوں سر کو سجائے ہوئے ہتھیلی پر
قطارِ زندہ دلاں میں شمار ہونے کو

جو ہو سکے تو مری جاں سمیٹ لے مجھ کو
کہ ریزہ ریزہ بدن ہے غبار ہونے کو

بس ایک سجدۂ دل ، ایک حرفِ حق عاجزؔ
 ... ... یہی بہت ہے عبادت گزار ہونے کو

Machal Raha Hai Mera Dil Figaar Honey Ko
Taras Rahi Hein Khizaei'n Bahaar Honey Ko

Chhalak Raha Hai Lahoo Ashk Ban K Aankho'n Se
Kisi Ki Tishna Labi Par Nisaar Honey Ko

Kharra Hoon Sehar Ko Sajay Huey Hatheli Par
Qatar-e-Zindaa'n Dilaa'n Mein Shumaar Honey Ko

Jo Ho Sakey Tou Meri Jaan Samait Lay Mujh Ko
Keh Raiza Raiza Badan Hai Gubaar Honey Ko

Bus Aik Sajda-e-Dil , Aik Harf-e-Haq Aajiz
Yehi Bohat Ibadat Guzaar Honey Ko ... ...

Please Do Click +1 Button If You Liked The Post  Then Share It
Get Free Updates in your Inbox
Follow us on:
facebook twitter gplus pinterest rss

No comments:

Post a Comment

Thanks For Nice Comments.