Tuesday, 4 February 2014

Pin It

Widgets

Chorr Dainey Sa Na Inkaar Se Kam Hota Hai

Runj Tou Runj Hai

چھوڑ دینے سے نہ انکار سے کم ہوتا ہے
رنج تو رنج کے اظہار سے کم ہوتا ہے

یہ اندھیرا جو مرے چاروں طرف پھیلا ہے
صرف اس شعلہء رخسار سے کم ہوتا ہے

سننی ہوتی ہے مجھے زمزمہ آثار آواز
بولنا بھی تو مجھے یار سے کم ہوتا ہے

اس لیئے چھوڑ کے سب کام تری سمت آؤں
درد دل کا ترے دیدار سے کم ہوتا ہے

مال و دولت بھی نہیں ایسی بر شے کوئی
رنج کچھ درہم و دینار سے کم ہوتا ہے​

کونسی چیز ہے دیہات میں ملتی نہیں جو
نرخ بھی شہر کے بازار  سے کم ہوتا ہے​

بات کرنے کے لیئے کوئی تو ہوتا ہے حنیف
.......خوف کچھ تو درو دیوار سے کم ہوتا ہے​

Chorr Dainey Sa Na Inkaar Se Kam Hota Hai
Runj Tou Runj K Izhaar Se Kam Hota Hai

Yeh Andhera Jo Meray Charon Taraf Phaila Hai
Sirf Us Shola-E-Rukhsaar Se Kam Hota Hai

Sun'ni Hoti Hai Mujhe Zam Zama'h Aasar-E-Awaaz
Bolna Bhi Tou Mujhe Yaar Se Kam Hota Hai

Is Liye Chorr K Sab Kaam Teri Simt Aao'n
Dard Dil Ka Teray Deedaar Se Kam Hota Hai

Maal-O-Dolat Bhi Nahi Aisi Buri Shay Koi
Runj Kuch  Dirham-O-Dinaar Se Kam Hota Hai

Konsi Cheez Hai Dihaat Mein Milti Nahi Jo
Narkh Bhi Shahar K Bazar Se Kam Hota Hai

Baat Karne K Liye Koi Tou Hota Hai Haneef
Khof Kuch Tou Dar-O-Diwaar Se Kam Hota Hai...



Please Do Click g+1 Button If You Liked The Post  & Share It
Get Free Updates in your Inbox
Follow us on:
facebook twitter gplus pinterest rss

No comments:

Post a Comment

Thanks For Nice Comments.