Tuesday, 18 February 2014

Pin It

Widgets

Milay Hein Baad Muddat K Bala K Sard Hein Lehjay

Sard Hein Lehjay

ملے ہیں بعد مدت کے، بلا کے سرد ہیں لہجے
کہ جلنا بھی نہیں‌ممکن، پگھلنا بھی نہیں ممکن

تعلق ٹوٹ جانے سے، امیدیں ٹوٹ جاتی ہیں
دلوں میں حسرتیں لے کر، بہلنا بھی نہیں‌ممکن

بہت ناکامیاں لے کر، ہوئے ہیں خاک کے قیدی
چلو اب آج سے گھر سے، نکلنا بھی نہیں ممکن

اسے اتنا نہ سوچا کر، تیری عادت نہ بن جائے
....پھر ایسی عادتیں محسن بدلنا بھی نہیں ممکن

Miley Hein Baad Muddat K , Bala K Sard Hein Lehjay
K Jalna Bhi Nahi Mumkin, Pighalna Bhi Nahi Mumkin

Ta’alluq Toot Janey Se , Umeedein Toot Jati Hein
Dilo’n Mein Hasratein Lay Kar, Behalna Bhi Nahi Mumkin

Bohat Nakamiyan Lay Kar , Hoey Hein Khaak K Qaidi
Chalo Ab Aaj Se Ghar Se, Nikalna Bhi Nahi Mumkin

Usay Itna Na Socha Kar, Teri Aadat Na Bun Jaey
Phir Aisi Aadatei’n Mohsin , Badalna Bhi Nahi Mumkin..


  Please Do Click g+1 Button If You Liked The Post  & Share It
Get Free Updates in your Inbox
Follow us on:
facebook twitter gplus pinterest rss

No comments:

Post a Comment

Thanks For Nice Comments.