Monday, 16 June 2014

Pin It

Widgets

Ik Ik Kar K Chorr Gaey Sab Log Mujhe

Judai Urdu Poetry

جب سے لگا ہے تنہائی کا روگ مجھے
اِک اِک کر کے چھوڑ گئے سب لوگ مجھے

بُجھتا سوُرج میری آنکھیں چھین گیا
کالی رات نے پہنایا ہے سوگ مجھے

وصل کی رُت سے محرومی کے موسم تک
بھول گئے ہیں اب سارے سنجوگ مجھے

درد کا جنگل اَٹا ہوُا ہے سانپوں سے
دِل کا جوگی روز سِکھائے جوگ مجھے

کل شب اُجلے چہروں کی اِک محفل میں
 ... یاد آئے ہیں محسنؔ کیا کیا لوگ مجھے


Jab Se Laga Hai Tanhai Ka Rog Mujhe
Ik Ik Kar K Chorr Gaey Sab Log Mujhe

Bujhta Sooraj Meri Aankhen Chheen Gaya
Kaali Raat Ne Pehnaya Hai Sog Mujhe

Visal Ki Rutt Se Mehroomi K Mosam Tak
Bhool Gaey Hein Ab Saray Sanjog Mujhe

Dard Ka Jungle Atta Hua Hai Saanpo Say
Dil Ka Jogi Roz Sikhaey Jog Mujhe

Kal Shab Ujley Chehron Ki Ik Mehfil Mein
Yaad Aaey Hein Mohsin Kia Kia Log Mujhe .....


 Please Do Click g+1 Button If You Liked The Post  & Share It
Get Free Updates in your Inbox
Follow us on:
facebook twitter gplus pinterest rss

1 comment:

Thanks For Nice Comments.