Monday, 2 June 2014

Pin It

Widgets

Khud Apni Aag Mein Jaltey Hein Kuch Khabar Hai Tumeh

Sad Poetry Collection 

ہم آفتاب سے ڈھلتے ہیں کچھ خبر ہے تمہیں
خود اپنی اگ میں جلتے ہیں  کچھ خبر ہے تمہیں

جو سنگ ٹوٹ نا پائے جہاں کی کوشش سے
ہمارے غم میں پگھلتے ہیں  کچھ خبر ہے تمہیں

تباہیوں پہ ہماری جو کل تک خوش تھے
سنا ہے ہاتھ وہ ملتے ہیں  کچھ خبر ہے تمہیں

تمہاری راہ میں آنکھیں بچھا رہے تھے کبھی
جو آج راہ بدلتے ہیں  کچھ خبر ہے تمہیں

بلندیوں پہ نہ ڈھونڈو کہ گوہر نایاب
زمین کی گود میں پلتے ہیں کچھ خبر ہے تمہیں

زمانہ جیسے بہلتا ہے میری جان ہم سے بھی
اسی طرح سے بہلتے ہیں  کچھ  خبر ہے تمہیں

ہم آبِ سیم کی مانند ساری رات عدیل
...بنا تمھارے مچلتے ہیں کچھ  خبر ہے تمہیں

Hum Aftaab Se Dhaltey Hein Kuch Khabar Hai Tumeh
Khud Apni Aag Mein Jaltey Hein Kuch Khabar Hai Tumeh

Jo Sang Toot Na Paey Jahan Ki Koshish Se
Hamare Gham Mein Pighaltey Hein Kuch Khabar Hai Tumeh

Tabahiyon Pe Hamari Jo Kal Tak Khush Thay
Suna Hai Hath Woh Maltey Hein Kuch Khabar Hai Tumeh

Tumhari Raah Mein Aankhein Bicha Rahe Thay Kabhi
Jo Aaj Raah Badaltey Hein Kuch Khabar Hai Tumeh

Bulandiyon Pay Na Dhoondo K Johahr-E-Nayaab
Zameen Ki Goud Mein Paltey Hein Kuch Khabar Hai Tumeh

Zamana Jaisey Behalta Hai Meri Jaan Hum Se Bhi
Usi Tarha Se Behaltey Hein Kuch Khabar Hai Tumeh

Hum Aab-E-Seem Ki Maanind Saari Raat Adeel
Bina Tumhare Machaltey Hein Kuch Khabar Hai Tumeh....


Please Do Click g+1 Button If You Liked The Post  & Share It
Get Free Updates in your Inbox
Follow us on:
facebook twitter gplus pinterest rss

1 comment:

Thanks For Nice Comments.