Thursday, 24 July 2014

Pin It

Widgets

Sun Rahey Hein Hum Hamara Naam Zair-e-Gor Hai

Behtareen Urdu Ghazlein

کیا دیا جائے ہمیں انعام  زیر ِغور ہے
سُن رہے ہیں ہم ، ہمارا نام زیر ِغور ہے

ریت کے ٹیلے اُڑا کر لے گیا طوفان ِ باد
ساکنان ِ دشت کا انجام زیر ِغور ہے

دیکھیے کیا رنگ لائے منصفوں کا فیصلہ
میرے بارے میں ترا  الزام ، زیر ِغور ہے

جو نگاہ ِ غیر میں بھی قابل ِ تحسین ہو
کیا کریں ایسا نرالا کام ، زیر ِغور ہے

موسم ِنامہرباں کو اِس زمیں پر بھیج کر
وقت نے بھیجا ہے جو پیغام زیر ِغور ہے
 
ایک دوراہے پہ آ کر رُک گیا ہے کارواں
کون سی ہے شاہراہ ِ عام زیر ِغور ہے

پُوچھتے ہیں مجھ سے شاہد میرے سارے ہم نشیں
 ................اِن دنوں کیوں تلخی ِ ایام زیر ِغور ہے

Kia Diya Jaey Hamei'n In'aam Zair-E-Gour Hai
Sun Rahey Hein Hum , Hamara Naam Zair-E-Gor Hai

Rait K Teelay Urra Kar Lay Gaya Toofan-E-Baad
Saakinan-E-Dasht Ka Anjaam Zair-E-Gor Hai

Dekhye Kia Rung Laey Munsifon Ka Faisla
Meray Baarey Mein Tera, Ilzaam Zair-E-Gor Hai

Jo Nigah-E-Gair Mein Qabil-E-Tehseen Ho
Kia Karen Aisa Niraala Kaam , Zair-E-Gor Hai

Mosam-E-Na Meharbaan Ko Iss Zameen Par Bhaij Kar
Waqt Ne Bhaija Hai Jo Paighaam Zair-E-Gor Hai

Aik Dorahay Pay Aakar Ruk Gaya Hai Kaarwan
Kon Si Hai  Shahr-E-Aam Zair-E-Gor Hai

Poochtey Hein Mujhse Shahid Meray Saray Hum Nasheen
In Dino'n Kiun Talkhiy-E-Ayyaam Zair-E-Gor Hai.............
 .
 Please Do Click g+1 Button If You Liked The Post  & Share It
Get Free Updates in your Inbox
Follow us on:
facebook twitter gplus pinterest rss

5 comments:


  1. موسم ِنامہرباں کو اِس زمیں پر بھیج کر
    وقت نے بھیجا ہے جو پیغام زیر ِغور ہے


    Superb Collection

    ReplyDelete

Thanks For Nice Comments.