Tuesday, 12 August 2014

Pin It

Widgets

Bichrray Ga Tou Phir Yaad Bhi Aaega Ga Bohat Woh

Best Judai Ghazlein

معلوم نہ تھا ہم کو ستائے گا بہت وہ
بچھڑے گا تو پھر یاد بھی آئے گا بہت وہ

اب جس کی رفاقت میں بہت خندہ بہ لب ہیں
اس بار ملے گا تو رلائے گا بہت وہ

چھوڑ آئے گا تعبیر کے صحرا میں اکیلا
ہر چند ہمیں خواب دکھائے گا بہت وہ

وہ موج ہوا بھی ہے ذرا سوچ کے ملنا
امید کی شمعیں تو جلائے گا بہت وہ

ہونٹوں سے نہ بولے گا پر آنکھوں کی زبانی
 ....... افسانے جدائی کے سنائے گا بہت وہ


Maloom Na Tha Hum Ko Sataey Ga Bohat Woh
Bichrray Ga Tou Phir Yaad Bhi Aaega Ga Bohat Woh

Ab Jiski Rafaqat Mein Bohat Khanda'h Ba-Lab Hein
Iss Baar Milay Ga Tou Rulaey Ga Bohat Woh

Chorr Aaega Tabeer K Sehra Mein Akela
Har Chund Hamein Khuwaab Dikhaey Ga Bohat Woh

Woh Mouj Hawa Bhi Hai Zara Soch K Milna
Umeed Ki Shammei'n Tou Jalaey Ga Bohat Woh

Honton Se Na Bolay Ga Par Aankhon Ki Zubani
Afsaney Judai K Sunaey Ga Bohat Woh .........

 Please Do Click g+1 Button If You Liked The Post  & Share It
& Join Site With Gmail Id.
Get Free Updates in your Inbox
Follow us on:
facebook twitter gplus pinterest rss

10 comments:

Thanks For Nice Comments.