Friday, 29 August 2014

Pin It

Widgets

Rehne De Rat-Jagon Mein Pareshan Mazeed Usay

Behtareen Urdu Ghazals

رہنے دے رتجگوں میں پریشاں مزید اُسے
لگنے دے ایک اور بھی ضربِ شدید اُسے

جی ہاں ! وہ اِک چراغ جو سُورج تھا رات کا
تاریکیوں نے مِل کے کِیا ہے شہید اُسے

فاقے نہ جُھگیوں سے سڑک پر نکل پڑیں
آفت میں ڈال دے نہ یہ بحرانِ عید اُسے

فرطِ خُوشی سے وہ کہیں آنکھیں نہ پھوڑ لے
آرام سے سناؤ سحر کی نوید اُسے

ہر چند اپنے قتل میں شامل وہ خُود بھی تھا
پھر بھی گواہ مل نہ سکے چشم دید اُسے

بازار اگر ہے گرم تو کرتب کوئی دِکھا!
سب گاہکوں سے آنکھ بچا کر خرید اُسے

مدت سے پی نہیں ہے تو پھر فائدہ اُٹھا
وہ چل کے آ گیا ہے تو کر لے کشید اُسے

مشکُوک اگر ہے خط کی لکھائی تو کیا ہوا
.....جعلی بنا کے بھیج دے تو بھی رسید اُسے


Rehne De Rat-Jagon Mein Pareshan Mazeed Usay
Lagney De Aik Aur Bhi Zarb-E-Shadeed Usay

G Han ! Woh Ik Charaag Jo Sooraj Tha Raat Ka
Tareekiyon Ne Mil K Kiya Hai Shaheed Usay

Faqay Na Jhuggiyon Se Sarrak Par Nikal Parrei'n
Aafat Mein Daal De Na Yeh Hijran-E-Eid Usay

Fart-E-Khushi Se Woh Kaheen Aankhein Na Phorr Lay
Aaraam Se Sunao Sehar Ki Naveed Usay

Har Chand Apne Qatal Mein Shamil Woh Khud Bhi Tha
Phir Bhi Gawah Na Mil Sakay Chashm-E-Deed Usay

Bazaar Agar Hai Garm  Tou Kartab Koi Dikha
Sab Gaahakon Se Aankh Bacha Kar Khareed Usay

Muddat Se Pee Nahi Hai Tou Phir Faaida Utha
Woh Chal K Aagaya Hai Tu Kar Lay Kasheed Usay

Mashkook Agar Hai Khat Ki Likhaie Tou Kia Hua
Ja'ali Bana K Bhaij Day Tu Bhi Raseed Usay.........

 Please Do Click g+1 Button If You Liked The Post  & Share It

Get Free Updates in your Inbox
Follow us on:
facebook twitter gplus pinterest rss

6 comments:

Thanks For Nice Comments.