Friday, 12 September 2014

Pin It

Widgets

In Aandhiyon Mein Tou Piyare Charagh Sab K Gaey

Ahmed Faraz Ghazals

  
    نظر بجھی تو کرشمے بھی روز و شب کے گئے
    کہ اب تلک نہیں نظر آئے ھیں لوگ جب کے گئے

    سنے گا کون تری بے وفائیوں کا گلہ
    یہی ھے رسم زمانہ تو ھم بھی اب کے گئے

    مگر کسی نے ھمیں ھمسفر نہیں جانا
    یہ اور بات کہ ھم ساتھ ساتھ سب کے گئے

    اب آئے ھو تو یہاں کیا ھے دیکھنے کیلیے
    یہ شہر کب سے ھے ویراں وہ لوگ کب کے گئے

    گرفتہ دل تھے مگر حوصلہ نہ ہارا تھا
    گرفتہ دل ھیں مگر حوصلے بھی اب کے گئے

    تم اپنی شمع تمنا کو رو رہے ھو فراز
    ...ان آندھیوں میں تو پیارے چراغ سب کے گئے

Nazar Bujhi Tou Karishmay Bhi Roz-O-Shab K Gaey
Ke'h Ab Talak Nahi Aaey Hein Log Jab Se Gaey

Suney Ga Kon Teri Be-Wafaiyon Ka Gila'h
Yehi Hai Rasm-E-Zamana Tou Hum Bhi Ab K Gaey

Magar Kisi Ne Hamein Humsafar Nahi Jana
Yeh Aur Baat K'eh Hum Sath Sath Sab K Gaey

Ab Aaey Ho Yahan Tou Kia Hai Dekhne K Liyeh
Yeh Shehar Kab Se Viraan Hai Woh Log Kab K Gaey

Girafta Dil Thay Magar Hosla Na Hara Tha
Girafta Dil Hein Magar Hosley Bhi Ab K Gaey

Tum Apni Shama Ko Ro Rahey Ho Faraz
In Aandhiyon Mein Tou Piyare Charagh Sab K Gaey...

 Please Do Click g+1 Button If You Liked The Post  & Share It
Get Free Updates in your Inbox
Follow us on:
facebook twitter gplus pinterest rss

4 comments:

Thanks For Nice Comments.