Tuesday, 28 October 2014

Pin It

Widgets

Haal Hum Apna Jo Logon Pe Ayaan Kar Daitey


حال ہم اپنا جو لوگوں پہ عیاں کر دیتے
سانس لینا بھی ہمارا وہ گراں کر دیتے

ڈھونڈنے وہ مجھے آیا ہی نہیں ہے ورنہ
رہنمائی مرے قدموں کے نشاں کر دیتے

شدتِ غم سے یہ ممکن تھا پگھل جاتا وہ
غم ترا گر کسی پتھر سے بیاں کر دیتے

غم کے موسم میں بُخارات کی صورت آنسو
دِل سے اٹھتے تو پھر آنکھوں میں دھواں کر دیتے

ہم نے اچھا ہی کیا اشک سنبھالے ورنہ
....ساتھ دنیا کو بھی ہم گریہ کناں کر دیتے

Haal Hum Apna Jo Logon Pe Ayaan Kar Daitey
Saans Laina Bhi Hamara Woh Giraan Kar Daitey

Dhoondney Woh Mujhe Aaya He Nahi Hai Warna
Rehnumai Merey Qadmo'n K Nishaan Kar Daitey

Shiddat-E-Gham Se Yeh Mumkin Tha Pighal Jata Woh
Gham Tera Gar Kisi Pathar Se Bayaan Kar Daitey

Gham K Mosam Mein Bukharaat Ki Soorat Aansoo
Dil Uth'tey Tou Phir Aankhon Mein Dhuwaan Kar Daitey

Hum Ne Acha He Kia Ashk Sanbhaley Warna
Sath Dunya Ko Bhi Hum Girya Kanaa'n Kar Daitey.....


Please Do Click g+1 Button If You Liked The Post  & Share It
Get Free Updates in your Inbox
Follow us on:
facebook twitter gplus pinterest rss

4 comments:

Thanks For Nice Comments.