Saturday, 1 November 2014

Pin It

Widgets

Ab K Apney Honton Pay Khokhli Duaaein Hein

Best Sad Poetry

بے قرار سانسوں میں گونجتی صدائیں ہیں
اب کے اپنے ہونٹوں پہ کھوکھلی دعائیں ہیں

بے حِسی کے مارے ہیں اپنے شہر کہ سب لوگ
پاؤں سے زمیں، سر سے کھینچتے ردائیں ہیں

تیری چاہتوں نے کل خواب کچھ دکھائے تھے
آج اپنی نیندوں کو ڈھونڈتی نگاہیں ہیں

آگہی کے رستوں پر صرف زخم ملتے ہیں
اس پہ چلتے رہنے کی انگنت سزائیں ہیں

ہاں وہ پچھلے موسم تھے جن میں پھول کھلتے تھے
 ...........زہر اب فضاؤں میں گھولتی ہوائیں ہیں
Beqarar Saanson Mein Goonjti Sadaein Hein
Ab K Apney Honton Pay Khokhli Duaaein Hein

Be-Hasi K Maray Hein Apne Shehar K Sab Log
Paon Se Zameen, Sar Se Khainchtey Ridaaein Hein

Teri Chahaton Ne Kal Khuwab Kuch Dikhaey Thay
Aaj Apni Neendon Ko Dhoondti Nigahein Hein

Aagahi K Rastey Par Sirf Zakhm Miltey Hein
Is Pay Chaltey Rehney Ki Un-Ginat Sazaein Hein

Han Woh Pichley Mosam Thay Jin Mein Phool Khiltey Thay
Zehar Ab Fizaaon Mein Gholti Hawaein Hein ........

Please Do Click g+1 Button If You Liked The Post  & Share It

Get Free Updates in your Inbox
Follow us on:
facebook twitter gplus pinterest rss

6 comments:

Thanks For Nice Comments.